تاریخ شائع کریں2022 18 May گھنٹہ 21:13
خبر کا کوڈ : 550138

ایران کی مضبوط پیشرفت سے مستفید ہونے پر پاکستان میں اجلاس منعقد

اعلی ریاستی حکام پر زور دیا کہ وہ اس بات کا جائزہ لیں کہ ان شعبوں میں پاکستان کے صوبہ سندھ کو ترقی دینے کے لیے ایران کے تجربے کو کس طرح استعمال کیا جائے۔
ایران کی مضبوط پیشرفت سے مستفید ہونے پر پاکستان میں اجلاس منعقد
 پاکستانی صوبے سندھ کی صوبائی وزیر صحت نے اپنے حالیہ دورہ ایران میں مختلف شعبوں بالخصوص ٹیکنالوجی میں ہمارے ملک کی نمایاں ترقی کا مشاہدہ کرتے ہوئے وطن واپسی کے بعد ایران کی مضبوط پیشرفت سے مستفید ہونے پر پاکستان میں ایک اجلاس منعقد کیا۔

پاکستانی صوبے سندھ کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق، "عذرا پیچوہو" نے ایرانی اصفہان، شیراز کے صوبوں کے دورے  تہران میں Inotex 2022 نمائش میں شرکت کے بعد، اپنے ملک میں اس دورے کے نتائج کا جائزہ لینے کے لیے اعلی ریاستی حکام کے ساتھ ایک اجلاس کا انعقاد کیا۔

منعقدہ اس اجلاس میں میں  صوبائی وزیر برائے توانائی کے امور، صوبائی وزیر کے معاون خصوصی برائے ٹیکنالوجی کے امور اور لائیو سٹاک اور ماہی پروری کے وزیر نے شرکت کی جس میں فریقین نے ریاستی وزیر صحت کے ذریعہ کئے گئے نتائج اور مشاورت پر تبادلہ خیال کیا۔

رپورٹ کے مطابق، اس موقع پر عذرا پیچوہو نے ٹیکنالوجی، توانائی، طب، صحت اور ماہی پروری کے شعبوں میں اسلامی جمہوریہ ایران کی نمایاں پیشرفت کی وضاحت کرتے ہوئے ان سے فائدہ اٹھانے کے طریقے کار نکالنے پر زور دیا۔

انہوں نے اعلی ریاستی حکام پر زور دیا کہ وہ اس بات کا جائزہ لیں کہ ان شعبوں میں پاکستان کے صوبہ سندھ کو ترقی دینے کے لیے ایران کے تجربے کو کس طرح استعمال کیا جائے۔

واضح رہے کہ پاکستانی صوبے سندھ کی صوبائی وزیر صحت نے المصطفی سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فاؤنڈیشن (ص) کی دعوت پر Inotex نمائش میں شرکت اور ہمارے ملک کے اختراعی اداروں کے دورے کیلئے اسلامی جمہوریہ ایران کا سفر کیا۔

انہوں نے 7 مئی  کو صوبے اصفہان پہنچ گئیں جہاں صوبائی حکام کے ایک گروپ اور رویان سٹیم سیل انسٹی ٹیوٹ نے ان کا استقبال کیا۔

انہوں نے رویان انسٹی ٹیوٹ اور بائیو ٹیکنالوجی کمپنیوں کا دورہ کرنے کے لیے اصفہان کا سفر کیا ہے۔ عذرا پیچوہو نے اصفہان، تہران اور شیراز کے سائنسی کمپلیکس کا دورہ بھی کیا۔

پاکستانی وفد نے پردیس ٹیکنالوجی پارک میں Inotex ٹیکنالوجی اینڈ انوویشن ایونٹ میں شرکت کی۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے کراچی میں تعینات ایرانی قونصل جنرل "حسن نوریان" نے سندھ کی صوبئی وزیر صحت سے ایک ملاقات میں بائیو ٹیکنالوجی، فارماسیوٹیکل تعاون، بچھو اور سانپ کے کاٹنے کی ویکسین کی تیاری کی ٹیکنالوجی میں تعاون کی ترقی اور دلچسپی کے موضوعات پر بات چیت کی تھی۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ یہ سفر کراچی میں ہمارے ملک کے قونصلیٹ جنرل کے تعاون سے اور المصطفی سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فاونڈیشن، پردیس ٹیکنالوجی پارک، رویان سٹیم سل انسٹی ٹیوٹ کی دعوت پر کیا گیا۔
http://www.taghribnews.com/vdcbfgbswrhbs8p.kvur.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس