تاریخ شائع کریں2022 18 May گھنٹہ 12:46
خبر کا کوڈ : 550064

فنلینڈ اور سویڈن کی نیٹو میں شمولیت سے بیجنگ کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کو نقصان پہونچے گا

فنلینڈ کا نیٹو میں شامل ہونا بیجنگ-ہیلسنکی تعلقات میں نئے عناصر کے داخل ہونے کا سبب بنے گا، جو دونوں ملکوں کے ہمیشہ سے چلے آرہے اچھے تعلقات کے لئے نقصان دہ ثابت ہوگا۔
فنلینڈ اور سویڈن کی نیٹو میں شمولیت سے بیجنگ کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کو نقصان پہونچے گا
نیٹو میں فنلینڈ اور سویڈن کی شمولیت کی درخواست پر چین کا رد عمل بھی سامنے آیا ہے۔

فنلینڈ اور سویڈن کی نیٹو میں شمولیت کی درخواست کے رد عمل میں چینی وزارت خارجہ کے ترجمان ژائو لیجیان نے کہا کہ ان دونوں ملکوں کی نیٹو میں شمولیت سے بیجنگ کے ساتھ دو طرفہ تعلقات کو نقصان پہونچے گا۔

مہر نیوز کے مطابق، ژائو لیجیان نے پیر کے روز کہا کہ فنلینڈ کا نیٹو میں شامل ہونا بیجنگ-ہیلسنکی تعلقات میں نئے عناصر کے داخل ہونے کا سبب بنے گا، جو دونوں ملکوں کے ہمیشہ سے چلے آرہے اچھے تعلقات کے لئے نقصان دہ ثابت ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ یورپ کی سکورٹی کے موضوع پر چین کا موقف واضح ہے اور بیجنگ کو امید ہے کہ سبھی فریق سکیورٹی کے ایک دوسرے پر منحصر ہونے کے اصول پر پابند ہونگے اور ایک دوسرے کی جائز تشویش کا احترام کریں گے۔

قابل ذکر ہے کہ فنلینڈ اور سویڈن کے نیٹو میں شامل ہونے کی درخواست پر روسی حکومت کا بھی منفی رد عمل سامنے آیا ہے۔

روسی صدر دفتر کے ترجمان دیمتری پسکوف نے بھی پیر کے روز فنلینڈ اور سویڈن کے فیصلے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس فوجی اتحاد کے پھیلتے دائرے سے یورپ کی سکیورٹی میں کوئی مدد نہیں ملے گی۔
http://www.taghribnews.com/vdcjmyeixuqeiyz.3lfu.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس