>> جارح ممالک چاہتے ہیں کہ یمن جواب نہ دے تو انہیں جارحیت بند کر دینا چاہئے | تقريب خبررسان ايجنسی (TNA)
تاریخ شائع کریں2022 26 January گھنٹہ 20:03
خبر کا کوڈ : 536101

جارح ممالک چاہتے ہیں کہ یمن جواب نہ دے تو انہیں جارحیت بند کر دینا چاہئے

یمن کے وزیر خارجہ ہشام شرف نے کہا کہ جو ممالک سعودی و اماراتی جارحین کے خلاف یمنی فوج کی کارروائی کی مذمت کرتے ہیں، انہیں جان لینا چاہئے کہ یمن کے عوام کے لئے اب جارحیت کے جواب میں حقیقی اقدامات انجام دینا جتنا اہم ہے، اس کے سامنے ملکوں کی مذمت کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔
جارح ممالک چاہتے ہیں کہ یمن جواب نہ دے تو انہیں جارحیت بند کر دینا چاہئے
یمن کی مرکزی حکومت نے زور دے کر کہا ہے کہ اگرچہ طوفان یمن آپریشن کی مذمت کی گئی ہے تاہم دنیا جانتی ہے کہ یہ کارروائی ہمارا قانونی حق تھی۔

یمن کے وزیر خارجہ ہشام شرف نے کہا کہ جو ممالک سعودی و اماراتی جارحین کے خلاف یمنی فوج کی کارروائی کی مذمت کرتے ہیں، انہیں جان لینا چاہئے کہ یمن کے عوام کے لئے اب جارحیت کے جواب میں حقیقی اقدامات انجام دینا جتنا اہم ہے، اس کے سامنے ملکوں کی مذمت کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔

ہشام شرف نے کہا کہ اگر جارح ممالک چاہتے ہیں کہ یمن جواب نہ دے تو انہیں جارحیت بند کر دینا چاہئے اور امن کا راستہ اختیار کرنا چاہئے۔ یمن کی مرکزی حکومت کے وزیر خارجہ نے زور دے کر کہا کہ جو لوگ صنعا کو دہشتگردوں کی فہرست میں رکھنے کی دھمکی دے رہے ہیں ان سے ہم کہنا چاہتے ہیں کہ یہ جارح سعودی اماراتی اتحاد ہے جو گذشتہ سات برس سے یمن کے عوام کو قتل کر رہا ہے اور اس کا محاصرہ کئے ہوئے ہے۔

یمن کی مسلح افواج نے گذشتہ ایک ہفتے میں ابوظہبی اور دبئی کے خلاف طوفانِ یمن ایک اور طوفان یمن دو نامی فوجی کارروائیاں انجام دی ہیں اور انہیں میزائل اور ڈرون حملوں کا نشانہ بنایا ہے۔
http://www.taghribnews.com/vdcfxvdtyw6dmya.k-iw.html
آپ کا نام
آپکا ایمیل ایڈریس